ہوم / بین الاقوامی / امریکہ چین تجارتی جنگ:کئی امریکی کمپنیاں بند ہو جائیں گی

امریکہ چین تجارتی جنگ:کئی امریکی کمپنیاں بند ہو جائیں گی

امریکہ اور چین کے درمیان تجارتی جنگ نے امریکی کمپنیوں کو سب سے زیادہ نقصان پہنچایا ہے۔ امریکی ریاست نیوجرسی میں 125 سال سے قائم جوتے تیار کرنے والی کمپنی ایس جی بند ہونے جا رہی ہے۔ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ 15 دسمبر کو چین سے امریکہ آنے والی مصنوعات پر مزید 15 فیصد ٹیکس عائد کرنے جا رہے ہیں۔ نیوجرسی میں قائم جوتے تیار کرنے والی کمپنی ایس جی کے چیف ایگزیکٹو میٹ فیئنر کہتے ہیں کہ ان کیلئے کاروبار کرنا ممکن نہیں رہا۔ ایس جی چین سے جوتے تیار کروا کر امریکہ کے بڑے ڈپارٹمنٹل اسٹورز کو فروخت کرتی ہے۔ میٹ فیئنر کا کہنا ہے کہ نئے ٹیکس کے بعد کاروباری لاگت اتنی بڑھ جائے گی کہ 125 سال سے قائم کمپنی کو بند کرنے کے علاوہ کوئی دوسرا راستہ نہیں بچے گا۔ کمپنی میں اس وقت 100 ملازمین کام کر رہے ہیں۔ چین اور امریکہ کی تجارتی جنگ شروع ہونے کے بعد سے اب تک دونوں ممالک ایک دوسرے کو کی جانے والی برآمدات پر 450 ارب ڈالر کے ٹیکس عائد کر چکے ہیں۔ اب امریکہ 156 ارب ڈالر کے مزید ٹیکس عائد کرنا چاہتا ہے جن میں زیادہ تر کنزیومر مصنوعات شامل ہیں۔ ان مصنوعات میں سمارٹ فونز، میک اپ کے برشز، بچوں کی کتابیں اور ملبوسات شامل ہیں۔ امریکہ میں فروخت ہونے والے 70 فیصد شوز چین سے تیار ہو کر آتے ہیں۔ نئے ٹیکسوں سے سب سے زیادہ فٹ ویئر انڈسٹری متاثر ہو گی۔  اب امریکی عوام کو ہر سال نئے جوتوں کی خریداری پر 4 ارب ڈالر اضافی خرچ کرنا پڑیں گے۔ فٹ ویئر ڈسٹری بیوٹرز اینڈ ریٹیلرز ایسوسی ایشن کے مطابق چینی مصنوعات پر عائد نئے ٹیکسوں کا سارا بوجھ امریکی صارفین پر پڑے گا۔ امریکہ میں ملبوسات اور جوتوں کی بڑی کمپنیاں نائیکے، کلارک اور اسٹیو میڈن سمیت جوتے تیار کرنے والی 200 کمپنیوں نے نئے ٹیکس عائد کرنے کی مخالفت کی ہے۔ جوتے فروخت کرنے والی ایسوسی ایشن کے صدر میٹ پریئسٹ کہتے ہیں کہ درآمدی مال پر عائد ٹیرف اصل میں ٹیکسز ہیں۔ ان ٹیکسوں سے جوتوں کی قیمتوں میں لامحالہ اضافہ ہو گا اور اس انڈسٹری میں بے روزگاری بڑھ جائے گی۔ وہائٹ ہاوٗس کا موقف ہے کہ ٹیرف بڑھانے پر مقصد چین کو اس بات پر مجبور کرنا ہے کہ وہ تجارتی لین دین میں شفافیت لے کر آئے۔ چین  امریکہ سے نہ صرف ٹیکنالوجی کو چوری کر رہا ہے بلکہ اپنے شہریوں کو سبسڈی دے کر امریکی صارفین پر بوجھ بڑھا رہا ہے۔ امریکی صدر نے کرسمس کی خریداری کی وجہ سے ٹیکسوں میں اضافے کا فیصلہ موٗخر کیا تھا لیکن اب 15 دسمبر کو نئے ٹیکس عائد کر دیئے جائیں گے۔ دونوں ملکوں کے درمیان تجارتی تنازعے کے حل کیلئے بات چیت جاری ہے تاہم تجزیہ کار کہتے ہیں کہ غیر یقینی صورتحال کے باعث سرمایہ کاری اور اعتماد کو نقصان پہنچ چکا ہے۔

یہ بھی چیک کریں

پاکستان اور سری لنکا کے درمیان پہلا ٹیسٹ ڈرا ہونے کے قوی امکانات

پاکستان اور سری لنکا کے درمیان راولپنڈی کے انٹرنیشنل اسٹیڈیم میں کھیلے جانے والا ٹیست …

وزیراعظم کی شاندار تقریرکے بعد طیب اردگان نے انکا بوسہ لے لیا، ویڈیو سوشل میڈیا پروائرل

لاہور… وزیراعظم پاکستان عمران خان کی اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے اجلاس میں کی …

امریکی کانگریس میں بھارتی کاکس کے چئیرمین کا مودی کے استقبالیہ میں جانے سے انکار ، پاکستانی کاکس کی چئیرپرسن استقبال کرنے والوں میں شامل ، استقبالیہ سے ٹرمپ بھی خطاب کریں گے

رپورٹ آفاق فاروقی کیلی فورنیا … ڈیموریٹک کانگریس مین اور کانگریس میں ساؤتھ ایشیا امور …

انڈر 19 ورلڈ کپ، پاکستانی بولرز کے ہاتھوں اسکاٹش بیٹنگ لائن تہس نہس

لاہور:  آئی سی سی انڈر19 ورلڈ کپ میں پاکستانی بولنگ تکون نے اسکاٹش بیٹنگ لائن کو …

آئی سی سی ویمنز ٹی ٹوئنٹی ورلڈکپ کیلیے اسکواڈ کا اعلان

آئی سی سی ویمنز ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ کیلیے اسکواڈ کا اعلان کردیا گیا۔ قومی …

مجھے دھمکیاں مل رہی ہیں کہ ’زندگی تماشا‘ ریلیز نہ کروں، سرمد کھوسٹ

لاہور: ایکٹر، پروڈیوسر، ڈائریکٹر سرمد سلطان کھوسٹ نے گزشتہ روز ایک ٹویٹ میں لکھا ہے کہ …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے