ہوم / بین الاقوامی / ملکہ برطانیہ نے پرنس ہیری اور میگھن کو معاملات طے ہونے تک کینیڈا اور برطانیہ میں رہائش کی اجازت دے دی

ملکہ برطانیہ نے پرنس ہیری اور میگھن کو معاملات طے ہونے تک کینیڈا اور برطانیہ میں رہائش کی اجازت دے دی

برطانیہ کے شاہی خاندان کے ایک اہم اجلاس میں طے پایا ہے کہ جب تک پرنس ہیری اور ان کی اہلیہ میگھن مارکل کے ساتھ معاملات طے نہیں ہوتے اس وقت تک شاہی جوڑا کینیڈا اور برطانیہ میں رہائش اختیار کر سکتے ہیں۔ ملکہ برطانیہ نے پرنس ہیری اور میگھن کی خواہشات کا احترام  کرتے ہوئے کہا ہے کہ ان کی خواہش کہ دونوں شاہی روایات کو برقرار رکھتے ہوئے مستقبل میں اپنے کردار کا تعین کریں۔ ملکہ برطانیہ نے توقع ظاہر کی ہے کہ آنے والے دنوں میں ناراض شاہی جوڑے کے ساتھ معاملات طے پا جائیں گے۔ شاہی خاندان کے سینئر افراد کا جو اہم اجلاس ہوا تھا اس میں پرنس ہیری اور ان کی اہلیہ میگھن مارکل کے اس فیصلے پر بات ہوئی جس میں دونوں نے شاہی خاندان کے سینئر فرد کی حیثیت سے دستبرداری کا اعلان کیا تھا۔ اپنے بیان میں ملکہ برطانیہ الزبتھ نے کہا ہے کہ پرنس آف ویلز شہزادہ ولیم اور ڈیوک آف کیمبرج پرنس چارلس کے ساتھ پرنس ہیری کی ملاقات اچھی رہی ہے۔  اس اہم اجلاس میں میگھن مارکل نے فون پر شرکت کی کیونکہ وہ ان دنوں کینیڈا میں رہائش پذیر ہیں۔ ملکہ برطانیہ نے کہا کہ وہ اور ان کا خاندان پرنس ہیری اور میگھن کے اس فیصلے کا احترام کرتے ہیں جس میں شاہی جوڑے نے اپنے نئی زندگی کا فیصلہ کیا ہے۔ اگرچہ شاہی خاندان کی یہ خواہش ہے کہ پرنس ہیری اور میگھن شاہی خاندان کے افراد کے طور پر اپنی ذمہ داریاں نبھائیں لیکن ان کی خود مختار زندگی گزارنے کے فیصلے کا احترام ہے تاہم دونوں شاہی خاندان کے فرد کے طور پر ساتھ ہی رہیں گے۔ انہوں نے کہا کہ عبوری مدت کے لئے ہیری اور میگھن کینیڈا اور برطانیہ میں رہائش رکھ سکتے ہیں جس کے بعد انہیں فیصلہ کرنا ہو گا کہ کیا ہو عوامی پیسے پر اپنی زندگی گزارنا چاہتے ہیں یا ایک علحیدہ فیملی کی صورت میں معاشی طور پر خود مختار ہونا چاہتے ہیں۔ پرنس ہیری اور میگھن نے اپنے فیصلے پر نطرثانی کرتے ہوئے دوبارہ شاہی حیثیت کو اختیار کرنے کا اعلان کیا تھا جس کے بعد ملکہ برطانیہ نے شاہی خاندان کے اہم افراد کا ایک ہنگامی اجلاس طلب کیا تھا۔ شاہی جوڑے نے کہا تھا کہ وہ معاشی طور پر خود مختار زندگی گزارنا چاہتے ہیں لیکن اس کے ساتھ ساتھ وہ شاہی خاندان کے سینئر فرد کی حیثیت سے دستبرداری کا فیصلہ بھی واپس لے لیں گے۔ ادھر کینیڈا کے وزیراعظم جسٹن ٹروڈو نے کہا ہے کہ شاہی خاندان کے کینیڈا منتقل ہونے پر ابھی کچھ نہیں کہا جا سکتا اور نہ ابھی یہ طے پایا ہے کہ شاہی خاندان کی سیکیورٹی اور دیگر معاملات پر کینیڈین ٹیکس گزاروں پر کتنا اثر پڑے گا۔ پرنس ولیم نے کئی بار اپنے چھوٹے بھائی شہزادہ ہیری سے اس بات کا خدشہ ظاہر کیا تھا کہ شاہی خاندان کو چھوڑنے کے بعد دونوں میاں بیوی کی زندگی کو خطرات لاحق ہو جائیں گے اور کہیں ان کی والدہ ڈیانا جیسا کوئی واقعہ دوبارہ پیش نہ آ جائے۔

View image on Twitter


ادھر برطانوی شہزادے ہیری کی اہلیہ میگھن مارکل کے امریکی ٹی وی کو متنازع انٹرویو  کی تیاریوں کی خبروں نے برطانوی شاہی خاندان کی نیندیں اڑا دیں ہیں۔ برطانوی میڈیا کے مطابق شاہی خاندان کو تشویش ہےکہ انٹرویو میں میگھن شاہی محل پر نسلی اور صنفی تعصب کے الزامات لگائیں گی جب کہ دونوں بھائیوں کی مبینہ رنجش کا معاملہ بھی عوامی بحث کا حصہ بنے  گا، جس سے شاہی خاندان کے وقار کو ٹھیس پہنچے گی۔

یہ بھی چیک کریں

ہیری اور میگھن نے ہالی وڈ اداکار ٹائلر پیری کے محل نما گھر میں رہائش اختیار کرلی

 برطانوی شاہی خاندان سے سبکدوش ہونے والے شہزادے  ہیری اور ان کی اہلیہ میگھن مارکل …

کورونا وائرس کا خوف: ملکہ الزبتھ نے بھی دستانے پہن لئے

کورونا وائرس کے خوف کے باعث برطانوی ملکہ الزبتھ نے بھی حفاظتی دستانے پہن لئے۔ …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے