ہوم / تازہ ترین / اپوزیشن کو پُرامن احتجاج کی اجازت،قانون شکنی پر سختی سے نمٹا جائے گا

اپوزیشن کو پُرامن احتجاج کی اجازت،قانون شکنی پر سختی سے نمٹا جائے گا

حکومت نے جمیعت علمائے اسلام سمیت دیگر تمام سیاسی جماعتوں کو اسلام آباد کے ڈی چوک میں پُرامن احتجاج کی اجازت دینے کا فیصلہ کیا ہے۔ حکومت کی مذاکراتی ٹیم نے وزیراعظم سے ملاقات کی جس میں فیصلہ کیا گیا کہ جب تک احتجاج پُرامن رہے گا اس وقت تک کسی کو کچھ نہیں  کہا جائے گا۔ پرائم منسٹر سیکریٹریٹ سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ سپریم کورٹ اور اسلام آباد ہائی کورٹ نے پُرامن احتجاج کیلئے جو طریقہ وضع کیا ہے اپوزیشن جب تک قانون اور آئین کے اندر رہ کر احتجاج جاری رکھنا چاہتے ہیں انہیں پُرامن احتجاج کی اجازت ہو گی۔ اسلام آباد کی عوام کی روزمرہ زندگی اور معمولات جب تک نارمل رہیں گے اس وقت تک احتجاج کیا جا سکتا ہے۔بیان میں کہا گیا ہے کہ وزیراعظم جمہوری روایات پر یقین رکھتے ہیں اور پُرامن احتجاج ہر شہری کا بنیادی حق ہے

یہ بھی چیک کریں

برطانوی انتخابات:سیاسی پارٹیوں کے نئے نئے انتخابی وعدے

برطانیہ میں عام انتخابات کیلئے ووٹنگ کے دن جوں جوں قریب آ رہے ہیں سیاسی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے