ہوم / تازہ ترین / بحریہ ٹاوٗن کا اپنے کسٹمرز کے ساتھ غیر انسانی سلوک

بحریہ ٹاوٗن کا اپنے کسٹمرز کے ساتھ غیر انسانی سلوک

آج کراچی کے بحریہ ٹاوٗن میں 400 الاٹیز اپنے پلاٹس کا قبضہ نہ ملنے پر بحریہ ٹاوٗن کے ہید آفس گئے جہاں انہوں نے انتظامیہ کے رویئے کے خلاف احتجاج کیا۔ الاٹیز کو یہ احتجاج مہنگا پڑ گیا کیونکہ انتظامیہ نے ان کو ایک کمرے میں بند کرے تمام لائٹس بند کر دیں اور انہیں محبوس کر دیا۔ ان الاٹیز میں اوورسیز پاکستانیوں کی بھی ایک بڑی تعداد موجود تھی۔ بیرون ممالک میں مقیم الاٹیز کے رشتہ دار سارا دن بحریہ ٹاوٗن کے ہیڈ آفس میں قید اپنے رشتہ داروں سے رابطہ کرنے کی کوشش کرتے رہے لیکن ان کے ساتھ رابطہ نہ ہو سکا۔بحریہ ٹاوٗن کے اعلیٰ حکام کو اس صورتحال سے آگاہ کیا گیا لیکن انہوں نے بھی اس کو کوئی نوٹس نہیں لیا۔ یہ 400 الاٹیز بحریہ ٹاوٗن کے کراچی ہیڈ آفس میں 9 گھنٹے تک دھرنا دیئے رہے جس کے بعد انہیں ایک بڑے ہال کمرے میں بند کر کے اس کی لائٹس بند کر دی گئیں۔ جو الاٹیز اندر اپنے بچوں اور فیملی کے ساتھ گئے تھے ان کو شدید پریشانی اٹھانی پڑی کیونکہ اندر نہ تو پانی دیا گیا۔ بچے سارا دن پیاس اور بھوک سے بلبلاتے رہے۔ جن الاٹیز کی فیملی کو پتہ چلا کہ ان کے پیاروں کے ساتھ اندر کیا سلوک ہو رہا ہے وہ باہر گیٹ پر آئے لیکن انتظامیہ نے ان کو اندر جانے کی اجازت نہ دی۔ سندھ حکومت کے نوٹس میں یہ بات لائی گئی لیکن سندھ حکومت بھی اس معاملے پر لاچار نظر آئی اور گیٹ کھلوانے میں ناکام رہی۔ پاکستانی میڈیا کو اس واقعہ کی فوٹیجز بھیجی گئیں  لیکن کسی ٹی وی چینل میں اس خبر کو آن ایئر کرنے کی ہمت نہیں ہوئی۔

یہ بھی چیک کریں

شہریت کے متنازعہ بل پر ہنگامے، آسام فوج کے حوالے

مودی حکومت نے مذہب کی بنیاد پر شہریت کے نئے قانون کے خلاف شمال مشرقی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے