ہوم / تازہ ترین / آوٗ انفرادی زندگیاں گزاریں

آوٗ انفرادی زندگیاں گزاریں

انسانوں پر کنٹرول گناہ کبیرہ ہے


کل میں نے کہا تھا کہ پیروکار بنانا یا فولؤنگ کا شوق رکھنا شرک ہے۔  میں نے مثالیں دیکر ثابت کیا کہ کیوں ؟ آج میں کنٹرول اور تقلید کو بہت بڑا گناہ گردان رہا ہوں۔ انشا ء اللہ اس کو بھی آج مثالوں کے ساتھ ثابت کروں گا ۔ انسان بالکل آزاد پیدا ہوا اور آزاد اور اکیلا ہی اس دُنیا سے کُوچ کر جائے گا ۔ سارے کنٹرول ، اثر و رسوخ ، دوستیاں اور رشتے ناطے مطلب کے ہیں ۔ کچھ مطلب مادی ہیں اور کچھ نفسیاتی ۔ انسان ایک دوسرے سے منسلک ضرور ہے جسے انگریزی میں کنیکشن کہتے ہیں لیکن دوسرے انسان پر انحصار نہیں  جو انگریزی والا انٹر ڈیپینڈینٹ ہوتا ہے ۔

مادی رشتہ تو آپ سب کو پتہ ہی ہے۔ پیسہ ، مفاد اور میٹریل بینیفٹ کے گرد گھومتا ہے ۔ نفسیاتی تعلقات والدین ، بہن بھائیوں، اولاد ، رشتہ داروں اور کچھ دوستوں کے درمیان ایسے ہوتے ہیں جس میں کوئی مادی مطلب یا فائدہ نہیں ہوتا ۔ بلکہ صرف اور صرف ایک جذباتی اور نفسیاتی تعلق ۔ یہ تعلق رُوح کا ہوتا ہے۔ روشنیوں کا ملاپ اور میل ۔ یہ رُوح کی روشنی کو منور کرتا ہے۔ ایک سکون دیتا ہے ۔ جسم کو پاک اور ہلکا کرتا ہے ۔ خالص عشق والا ماحول اور معاملہ ۔ بے لوث ناطے اس کیٹیگری میں فال کرتے ہیں ۔ اور ایک وقت میں ایسا عشق بہت لوگوں سے بھی ہو سکتا ہے ۔ کیونکہ عشق روح کے ساتھ ہے جسم کے نہیں ۔ روشنی تو بہت زیادہ شئیر ہو سکتی ہے لیکن بدن یا جسم صرف ایک ممکنہ فزیکل حد تک ۔ پیار یا محبت ایک سے زیادہ لوگوں سے ہو سکتا ہے گو کہ شادی ایک وقت میں ایک ہی ۔

جسمانی تعلقات اگر نفع نقصان والے نہ بھی ہوں تو ان کو دو افراد ایک دوسرے تک ہی محدود رکھنے کی خواہش رکھتے ہیں جیسے شادی میں۔ کیونکہ اس میں مطلب کا عنصر ہوتا ہے ۔ کنٹرول کی خواہش ہوتی ہے ۔ ساس اور بہو کی لڑائی دونوں ہی ایک مرد سے بہت اٹیچ ہوتے ہیں۔ اکثر بغیر مادی مطلب کے ۔ نفسیانی تعلق بھی کنٹرول میں لڑواتا ہے جسے مشہور ماہر نفسیات سگمنڈ فرائیڈ نے اوڈیپس کمپلیکس کہا ۔ کنٹرول کا سارے کا سارا کھیل جعلی ہے ، فراڈ ہے ، دھوکہ ہے اور ننگی بدمعاشی ۔ اس سے جتنا ہو سکے اجتناب کریں ۔

رب رُوح کی روشنی میں بستا ہے جس کا جذبہ اور دھڑکن دلوں سے اُٹھتا ہے ۔ دماغ اس کو گائیڈ کرتا ہے بہتر سے بہتر کرنے کے لیے ۔ دماغ بتائے گا اب اندھیرا ہے روشنی کی طرف واپس لوٹو ۔ یہ چیز اٹھانی ہے ، کھانی ہے یا سمیٹنی ۔ دماغ نروس سسٹم کے زریعے فنکشن کرتا ہے۔ دماغ کا شعور یا جذبات سے بالکل کوئی تعلق نہیں ہے ۔ سارے کا سارا سیاسی ، مزہبی اور معاشرتی فساد اور انتشار کنٹرول کے گرد گھومتا ہے ۔ دوکانداری کا معاملہ ہے ۔ بزنس انٹرسٹ کی باتیں ہیں ساری ۔ دولت اور سلطنتوں کا چکر ۔

سندھ میں بہت فقیر لوگ رہتے ہیں ۔ اکثر سے میری شاہ لطیف بھٹائی کے مزار پر ملاقات ہو جاتی تھی ۔ صوفی رُستمانی میرے دوست فقیر مجھے سوشل میڈیا سے ایک سال پہلے ملے ۔ انہوں نے مجھے ایک پیغام کے ساتھ اگلے دن ایک وڈیو کلپ بھجوایا ۔ کیا زبردست میرے والا وحدانیت کا فلسفہ

اس وڈیو کے ساتھ مندرجہ زیل پیغام تھا صوفی صاحب کا مانجھی فقیر  ایک صوفی راگی ہے اور روشن خیال ہے ۔ اس کا کوئی پیری مریدی کا سلسلہ نہیں ہے ۔جیسے ہم ڈیرہ یا سندھی میں ڈیرہ کو اوطاق کہتے ہیں۔ ایسے اس نے اپنے اوطاق کو آستانہ کا نام دیا ہوا ہے ۔ یہ پیری مریدی والا فقیر نہیں ہے۔ اس کی سیکڑوں کافیاں محفلوں میں گائی ہوئی آپ کو یوٹیوب پر ملیں گی ۔ اس کا ایک سازندہ ذاتی ناراضگی کی وجہ سے اس سے الگ ہوگیا تھا۔ وہ کہتا ہے مانجھی فقیر میں یہ خوبی ہے کہ جب محفل ختم ہو جو رقم ملتی تھی اس کو سب کے ساتھ برابر بانٹتا تھا اس کے علاوہ بھی دیتا تھا جبکہ باقی فنکار جو رقم ملے آدھی رقم اٹھاتے ہیں باقی آدھی رقم سازندوں کی ۔

زندگی کا کھیل یہاں صرف اتنا سا ہے جس وجہ سے میں اسے ہمیشہ سے بہت آسان کہتا نہیں تھکتا ۔ بہت ہی سادہ  کوئی بَل نہیں  کوئی پردے نہیں ۔ ہاں البتہ شیطانی راستہ عذاب ولا ہے ۔ شیطانی راستہ  لالچ ، طاقت اور ہوس پر مبنی ہے ۔ مال و دولت اکٹھا کرنا، اخلاقیات اور انسانی قدروں کو چند ٹکوں کی خاطر پامال کرنا ، یُوٹرن پر یُوٹرن لینا ، نری ذلالت و خواری ۔ مادہ پرستی کا گورکھ دھندہ ہزاروں خدا ، لاکھوں آقا، زندگی بھر مصیبتیں ہی مصیبتیں ۔ یہی قیامت یا دوزخ ہے ۔ صراط مستقیم یا رُوحانی راستہ جنت کا راستہ ہے ۔ اس دنیا والی جسمانی زندگی کو جنت بنا دیتا ہے ۔

کل رات ٹی وی پر ستار سُنتے سُنتے میری آنکھ لگ گئ ۔ مجھے پریاں ملنے آئیں ۔ جو میری کائنات سے محبت ہے ، عشق کی معراج ہے ۔ ہم نے اکٹھے رقص کیا ۔

اور ہم سب گا رہے تھے ، جھوم رہے تھے اس عشق میں جو ابدی ہے ۔ جو نور ہے  جو میں بھی ہوں اور تُو بھی ہے ۔ آپ کے گھر بھی ننھی پری ضرور آئے گی ۔ ضرور آئے گی ۔ روح کی پاکیزگی ضروری ہے ، شرط ہے ۔ اور کچھ بھی نہیں ۔

میری جنت یہی ہے ۔ اسی زندگی اور دنیا میں ۔ یہ ابدی ہے ۔ رُوح کی منتقلی اب صرف ایک رسم یا فارمیلیٹی ہو گی ۔ آپ سب بھی میرے ساتھ رقص کریں ۔ بہت مزہ آئے گا ۔ جنت مل جائے گی ۔ اللہ نگہبان ۔

یہ بھی چیک کریں

قدرت کا کھیل جاری و ساری

تحریر: نذر محمد چوہان قدرت کا انصاف زراد دیر سے مگر زبردست الحمد اللہ نواز …

برطانیہ میں جانسن کی جیت

تحریر : نذر محمد چوہان برطانیہ کے الیکشن اور امیروں کی جیت امیر لوگ ہی …

مادی پلیتیاں

صرف نیک نیتی اور توکل جیت ہیں انسان جب دنیا میں آتا ہے تو روتا …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے